دربدر گھومنے والی رمانے کی زیادتیوں کا شکار لاوارث لڑکی نجمہ دلہن بن گئی


SPسجاول سوہائی عزیز 
ایس ایس پی سجاول سوہائی عزیز تالپر نے زیادتی کا نشانہ بنائی گئی لاوارث ذہنی معذور لڑکی کو پولیس تحویل میں ہسپتال منتقل کروا دیا۔۔۔
الله پاک آپ کو اس معصوم اور مظلوم لڑکی کی حفاظت اور دیکھ بھال کرنے کا اجر دیے آمین
اس لاوارث اور نیم پاگل لڑکی کو پہلے حالات نے پاگل کیا,پھر لڑکی سے عورت بنا دیا,پھر کئی بار جنسی درندگی کا شکار کر کے حاملہ کیا اور اب یہ بھوکی ہے اور ہوٹل کے باہر اس لیے بیٹھی ہے کہ شاید کچھ کھانے کو مل جائے
ان اطلاعات پرایس پی سجاول سوہائی عزیز نے متاثرہ خاتون کو ڈھونڈ نکالا اور اس کے باعزت رہنے کا بندوبست کیا . اور باقی کارروائی جاری ہے
سجاول ، سندھ کی ذھنی توازن کھوئی ایک مجبور و بے کس بیٹی جو رات دن سجاول کی گلیوں بازاروں میں بھٹکتی پھرتی رہتی ہے۔ اسکی ذھنی معذوری کا آئے دن فائدہ اٹھاتے روٹی کے چند نوالوں کے عوض سجاول کے غیرتمند جوان اسکی عزت تار تار کرتے کرتے اسے حاملہ کر بیٹھے ہیں۔ اب وہ بیچاری کھانے کے ایک نوالے کے لیئے ہوٹلوں کے باہر بیٹھی رہتی ہیں جہاں 24 گھنٹے سندھ کے ہوٹلوں پہ بیٹھے مونچھوں پر تائو پھیرتے کئی جنسی درندے


اپنی ہوسناک ناک نگاہوں سے تاڑ رہے ہیں!...........!!!
یہ گونجے ہوئے قہقہے راستوں پر
یہ آوازے کھنچتے ہوئے آنچلوں پر
ثناخوان تقدیس مشرق کہاں ہیں ؟
یہ ڈھلکے بدن اور یہ مدقوق چہرے     
ثناخوان تقدیس مشرق کہاں ہیں     
یہ بھوکی نگاہیں حسینوں کی جانب
یہ بڑھتے ہوئے ہاتھ سینوں کی جانب
مدد چاہتی ہے یہ حوا کی بیٹی     
یشودھا کی ہم جنس رادھا کی بیٹی     
پیمبر کی امت زلیخا کی بیٹی
ثناخوان تقدیس مشرق کہاں ہیں
بلاؤ خدایان دیں کو بلاؤ     
یہ کوچے یہ گلیاں یہ منظر دکھاؤ     
ثناخوان تقدیس مشرق کو لاؤ
ثناخوان تقدیس مشرق کہاں ہیں ۔ ۔ !


یہ بھی پولیس ہے 

سجاول: چار ماہ قبل دربدر گھومنے والی رمانے کی زیادتیوں کا شکار لاوارث
لڑکی نجمہ دلہن بن گئ

ڈی آئی جی  فدا مستوئی اور ایس ایس پی سجاول سہائی عزیز ٹالپر نے سوشل

 میڈیا پر لڑکی کی تصاویر وائرل ہونے کے بعد لڑکی کو اپنی نگرانی میں رکھ کر علاج کروایا اب وہ لڑکی دلہن بن گئی گے۔
ڈی آئی جی اور ایس ایس پی نے انسانیت کی نئی مثال ایس ایس پی ضلع سجاول محترمہ سہائے عزیز ٹالپر کا قابل ستائش کام

الحمدللہ ماہ رمضان کے بابرکت مہینے کے پہلے جمعہ کے دن صبح سیف ہاؤس سجاول میں نوجوان ممتازملاح کے ساتھ شرعی اور قانونی اصولوں کے تحت شادی کرادی گئی ہے

ایس پی سجاول کی جانب سے روٹڑی ولیج ٹھٹہ میں ایک گھر بھی لے کردیا گیا ہے اور راشن سبزی،فروٹ اور مالی مدد بھی کی گئی ہے ۔  




Post a Comment

0 Comments